PIC لاہور کے ڈاکٹرز بھی کورونا وائرس کا شکار.تشویش ناک خبر

Spread the love

پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لاہور کے 23 ڈاکٹروں اور عملے کے ارکان میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔
پروفیسر ڈاکٹر آفتاب یونس میں کورونا ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد تمام ڈاکٹروں اور عملے کی اسکریننگ کی گئی 23 افراد کورونا پازیٹیو نکلے تاہم ان میں کوئی علامات نہیں تھیں۔
پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لاہور کے سرجن پروفیسر ڈاکٹر آفتاب یونس میں کورونا وائرس پازیٹیو آنے پر 450 ڈاکٹروں اور پیرامیڈیکل اسٹاف کی اسکریننگ کی گئی تھی۔
ان 450 میں سے 6 ڈاکٹروں، 10 نرسوں اور عملے کے 7 ارکان میں کورونا پایا گیا۔
پی آئی سی میں معمول کے مطابق کام جاری ہے، ادارے کے چیف ایگزیکٹیو ڈاکٹر ثاقب شفیع نے ’جیو نیوز‘ کو بتایا کہ پازیٹیو آنے والے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف میں کورونا وائرس کی کوئی علامات نہیں تاہم ان کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے: فیصل ایدھی (ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ) کا کورونا ٹیسٹ پازیٹو آگیا

ان کا کہنا ہے کہ سرجن پروفیسر ڈاکٹر آفتاب یونس کے کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے بعد 4 روز آپریشن تھیٹر بند رہا۔
ڈاکٹر ثاقب شفیع نے بتایا کہ وہاں اسپرے کیا گیا اور جراثیم سے مکمل صاف کرنے کے بعد آپریشن دوبارہ شروع کر دیے گئے ہیں، اب اینجیو پلاسٹی، اینجیو گرافی کے ساتھ پیس میکر بھی ڈالے جا رہے ہیں۔
ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ پروفیسر ڈاکٹر آفتاب یونس کورونا کو شکست دے چکے ہیں، جس کے بعد ان کے ٹیسٹ نیگیٹیو آنے پر انہیں اسپتال سے گھر شفٹ کر دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں