کیا ریلیف پیکج صرف رمضان تک محدود رہے گا؟بڑی خبر سامنے آگئی

Spread the love

وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار حماد اظہر کا کہنا ہے کہ ریلیف پیکج صرف رمضان تک محدود نہیں رہے گا۔
پاکستان تحریک انصاف کے رہنما حماد اظہرنے اسلام آباد جی نائن مرکز میں یوٹیلٹی اسٹور پر رمضان پیکج کا افتتاح کیا، اس دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حماد اظہر نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اڑھائی ارب کے رمضان ریلیف پیکج کا آغازکر دیا گیا ہے، ملک میں کھانے پینے کی اشیا اور ادویات کی ترسیل جاری ہے، کھانے پینے کی اشیا کی ترسیل پر کوئی پابندی نہیں ہے۔
حماد اظہر نے کہا کہ یوٹیلٹی اسٹورز کوحکومت پاکستان نے 50 ارب دیئے ہیں جبکہ پہلے 5 اشیا پرسبسڈی دی جا رہی تھی، اب 19 پردی جا رہی ہے۔
انہوں نے مزید کہ موبائل یوٹیلٹی اسٹورز بھی قائم کر رہے ہیں اور تخمینہ ہے کہ رمضان میں 80 لاکھ سے ایک کروڑ گھرانے مستفید ہوں گے۔
حماد اظہر نے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں کے خلاف نیا قانون لارہے ہیں، ذخیرہ اندوزی پر سزا دکان کے مالک کو ملے گی۔
ان کا کہنا تھا کہ قیمتوں پر کنٹرول کرنے کا نظام موجود ہے، ہم بڑی تعداد میں یوٹیلٹی اسٹورز کو بڑھا رہے ہیں، موبائل یوٹیلٹی اسٹورز شروع کیے ہیں جن کی تعداد 200 ہے۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حماد اظہر نے کا کہنا تھا کہ اس وقت مشکلات ہیں، چھوٹے تاجروں کو اکیلا نہیں چھوڑیں گے، چھوٹے اور درمیانے کاروباری افراد کے لیے پیکج لا رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے: پاک چین دوستی زندہ باد،چین نے دوستی کا حق ادا کر دیا

انہوں نے مزید کہا کہ یوٹیلٹی اسٹورز ایک آٹو میٹک ڈیجیٹل ادارہ بننے جا رہا ہے، یوٹیلٹی اسٹورز میں بھی اصلاح کی ضرورت ہے۔
حماد اظہر نے کہا کہ جو بھی سیکٹرز کھولے جا رہے ہیں وہ باقاعدہ تحقیق کے ساتھ کھول رہے ہیں، ہم کوشش کر رہے ہیں کہ کاروباری طبقے کے حالات بھی بہتر کرسکیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں نظم و ضبط کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔

کیا ریلیف پیکج صرف رمضان تک محدود رہے گا؟بڑی خبر سامنے آگئی” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں