ایک بریانی کی پلیٹ اور 1پانی کی بوتل2 افراد کیلئے،پولیس اہلکار طیش میں آگئے

Spread the love

عالمی وبا کورونا وائرس کے پیش نظر جاری سندھ بھر میں لاک ڈاؤن پر عمل درآمد کرانے والے پولیس اہلکاروں کی جانب سے سہولیات نہ ہونے پر شکایت کی گئی ہے۔
لاک ڈاﺅن کے دوران ڈیوٹی انجام دینے والے ماڈل ٹریفک سیکشن کے اہلکاروں کی جانب سے ویڈیو بنا کر افسران سے اپیل کی ہے کہ کرپشن کی انتہا ہے کہ ہمارے ساتھ ایسا سلوک کیا جارہا ہے، 2 اہلکاروں کو ایک بریانی اور ایک پانی کی بوتل دی جا رہی ہے جبکہ 2 جوانوں کے لیے کھانے کی مقدار بہت کم ہے۔پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ آئی جی سندھ ،ڈی آئی جی اور ایس ایس پی نوٹس لیں ، اہلکاروں نے ویڈیو میں پولیس کی جانب سے دیا گیا کھانا بھی دیکھایا ہے۔پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ سخت دھوپ اور گرمی میں ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں۔
واضح رہے کہ سندھ حکومت لاک ڈاﺅن پر مامور پولیس اہلکاروں کے لیے بجٹ جاری کر چکی ہے جس کے مطابق 8 کروڑ 49 لاکھ روپے سندھ حکومت کی جانب سے پولیس اہلکاروں کو جاری کیے جا چکے ہیں۔ذرائع کے مطابق سندھ پولیس نے اہلکاروں کو کھانا، ماسک، سینیٹائیزر فراہم کرنے کاعلامیہ جاری کیا تھا۔

ایک بریانی کی پلیٹ اور 1پانی کی بوتل2 افراد کیلئے،پولیس اہلکار طیش میں آگئے” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں