اُسکی نظرمیں پنہاں محبت پہ رائے دو Urdu Sad Ghazal By Zareen Munawar

اُسکی نظرمیں پنہاں محبت پہ رائے دو …. غزل … زریں منور

Spread the love

اُسکی نظرمیں پنہاں محبت پہ رائے دو
پھر شہرِ کم نگہ کی بِصارت پہ رائے دو

میں نے کہا کہ آپ کےچرچے ہیں چار سُو
اس نے کہا نہیں مری شہرت پہ رائے دو!

جسکو تمہاری یاد نے پتھر بنا دیا
پلکیں اُٹھاو اس کی شباہت پہ رائے دو

اپنے وظیفے یاد ہیں ہوں گے تمہیں مگر
میری وفا کی پہلی تلاوت پہ رائے دو

جس نے تڑپتی لاڈلی بوڑھے کو بیچ دی
تم اُس غریبِ شہر کی حاجت پہ رائے دو

کیوں دوست اپنے پیار کی رعنائی لے اُڑا
چاہت میں اس مکار کی وحشت پہ رائے دو

اک بوجھ کوکھ میں لیے اندھی فقیرنی
کہنے لگی مجھے مری حرمت پہ رائے دو

میں چاہتی ہوں سچ اِنہی ہونٹوں سے ہو بیاں
دیکھو مری طرف مری حالت پہ رائے دوِ

پھر یُوں ہوا کہ دیر تک وہ چیختی رہی
میں نے فقط کہا تھا محبت پہ رائے دو
زریں منور

اپنا تبصرہ بھیجیں