آم اور تربوز سے آپ 16 مزیدار ڈشیں بنا سکتے ہیں؟ ۔ قدرت کی عطا کردہ نایاب نعمتیں

Spread the love

گرمیوں کے موسم میں لوگوں کو آم اور تربوز کا شدت سے انتظار رہتا ہے۔ موسم گرما کے آغاز سے ہی بازاروں میں لال تربوز نظر آنا شروع ہوجاتے ہیں۔ جسم میں پانی کی مناسب مقدار برقرار رکھنے اور ٹھنڈک پہنچانے کے لیے یہ بہترین پھل مانا جاتا ہے۔ اس مزیدار پھل کا 92فیصد حصہ پانی پر مشتمل ہوتا ہے اور یہ صحت کے لیے انتہائی فائدہ مند ہے۔
اس میں متعدد قدرتی اجزاءجیسے وٹامن اے، بی6 اور سی، پوٹاشیم، لائیکوپین اور دیگر موجود ہوتے ہیں۔ اس پھل میں وٹامن سی کی بہت زیادہ مقدار پائی جاتی ہے جس سے انسان کی جِلداور نظر اچھی رہتی ہے۔ تربوز میں فائبر کی بھی اچھی مقدار پائی جاتی ہے جس کی وجہ سے یہ نظام انہضام کے لئے بہت مفید ہے۔ صبح کے وقت خالی پیٹ اگر تربوز کھایا جائے تو یہ سارا دن آپ کو تروتازہ رکھے گا۔
دوسری جانب پھلوں کے بادشاہ آم کی بات کریں تو بچے ہوں یا بڑے یہ ہر ایک کو بے حد پسند ہے۔ اس وقت مختلف قسم کے آم دستیاب ہیں اور لوگ اس پیلے خوش ذائقہ پھل کا خوب مزہ اٹھارہے ہیں۔ رات کو گھر میں سب گھر والوں کے ساتھ مل بیٹھ کر ٹھنڈے ٹھنڈے آم کھانے کا رواج ہمارے ہاں آج بھی زندہ ہے۔ اندرون و بیرون ملک آم کی پیٹیاں تحفہ کے طور پر دوست احباب اور عزیز واقارب کو بھیجی جاتی ہیں۔ یہ پھل کھانے میں جتنا مزیدار ہے افادیت کے لحاظ سے بھی اتنا ہی بیش قیمت ہے۔ طبی لحاظ سے اس کے بے شمار فوائد ہیں اور ایک اندازے کے مطابق یہ تقریباً4ہزار سال سے کاشت کیاجارہا ہے ۔ اس کی کئی اقسام ہیں۔

ہر قسم الگ ذائقہ ،رنگ اور حجم میں پائی جاتی ہے۔ جدید تحقیق کے مطابق آم میں موجود وٹامن اے اور اینٹی آکسیڈنٹس جِلد کو داغ دھبوں سے بچاتے ہیں اور بیٹا کروٹین سے بینائی تیز ہوتی ہے ۔ آم کا استعمال جِلد کو صاف چمکدار بنانے کے ساتھ ساتھ جھریوں سےبھی محفوظ رکھتا ہے ۔یہ قوت مدافعت کو بھی بہتر بناتا ہے۔
علاوہ ازیں یہ نظام انہظام، ہائی کولیسٹرول، آنکھوں،بالوں اور دل کی صحت کے لیے انتہائی مفید ہے۔ آم مختلف کھانوں ،چٹنیوں اور سلاد میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کا ملک شیک بھی بہت پسند کیا جاتا ہے۔ آم اور تربوز جیسے قدرت کے انمول تحفوں سے بنی چند ریسیپیزقارئین کے پیش خدمت ہیں۔

مینگو کوکونٹ کھیر

درکار اجزاء:
دودھ۔ آدھا لیٹر
لائچی۔ دو عدد
چینی ۔دو کھانے کے چمچ
چاول ۔آدھا کپ (پانی میں بھگوئے ہوئے)
آم۔ آدھا کلو
کھوپرا۔ایک کپ
پانی ۔تین کھانے کے چمچ

ترکیب:
ایک پین میں دودھ، الائچی، چینی اور چاول شامل کرکے ہلکی آنچ پر پکائیں۔ اس میں تھوڑا کھوپرا شامل کرکے اچھی طرح سے گاڑھا ہونے تک پکا لیں۔ اب آم کا چھلکا اُتار کر کاٹ لیں۔ پھر بلینڈر میں کٹے ہوئے آم، باقی بچا ہوا کھوپرا اور پانی شامل کرکے بلینڈ کرلیں۔ اس آم کے مکسچر کو کھوپرے کی کھیر میں شامل کرکے مکس کر لیں اور چولہا بند کر دیں۔ مینگو کوکونٹ کھیر کو کٹے ہوئے آم سے سجا کر پیش کریں۔

مینگو چیز کیک

درکار اجزاء:
بسکٹ کا چورا ۔دو کپ
مکھن۔ پچاس گرام
فلنگ کے لیے:
جیلیٹن پاؤڈر۔ دو کھانے کے چمچ
کریم چیز۔ ایک بوتل
کریم۔ دو پیکٹ
چینی۔ ایک کپ (پسی ہوئی)
مینگو ایسنس۔ آدھا چائے کا چمچ
آم کا گودا۔ ایک کپ
مینگو جیلی۔ ایک پیکٹ

ترکیب:
بسکٹ کا چورا اور مکھن کو اچھی طرح ملاکر مولڈ میں ڈالیں اور خوب دباکر فریج میں رکھ دیں۔ فلنگ کے لیےجیلیٹن پاؤڈر کو نیم گرم پانی میں بھگودیں۔ پھر ایک الگ برتن میں کریم چیز، کریم، چینی، مینگو ایسنس اور آم کا گودا ڈال کر بیٹر سے پھینٹ لیں۔ اب اس مکسچر کو مولڈ میں بسکٹ کے آمیزے کے اوپر ڈال کر دو گھنٹے کے لیے فریج میں رکھیں۔ پھر مینگو جیلی کو دو کپ پانی میں ڈال کر پکائیں اور ٹھنڈا کرکے مینگو چیز کیک پر ڈالیں۔ آخر میں اس کیک کو مزید بیس منٹ ٹھنڈا کرکے سرو کریں۔

مینگو چکن اسٹر فرائی

درکار اجزاء:
چکن بریسٹ۔ ایک عدد (بون لیس)
تیل ۔دو کھانے کے چمچ
مینگو پیوری۔4/3 کپ
نمک، کُٹی سیاہ مرچیں۔ حسب ِذائقہ
آم ۔ایک کپ(سلائس کٹے ہوئے)
لال شملہ مرچ ۔ایک عدد (لمبائی میں کٹے ہوئے)
بروکلی (پھول الگ کئے ہوئے)۔ایک کپ
کارن فلور۔ ایک چائے کا چمچ
پانی۔ دو چائے کے چمچ

ترکیب:
ایک سوس پین میں تیل گرم کریں۔ گوشت کے لمبے ٹکڑے کاٹ کر ڈالیں اور فرائی کریں۔ اس کے بعد اس میں شملہ مرچ، بروکلی کے پھول، مینگور پیوری نمک سیاہ مرچ ڈال کر 5 منٹ تک پکائیں۔ آخر میں کارن فلور کو پانی میں مکس کر کے ڈالیں۔ چاول کے ساتھ کھانے کے لیے پیش کریں۔

مینگو وِپ وِد کریم

درکار اجزاء:
کنڈینسڈمِلک ۔تین چوتھائی پیالی
دودھ ۔آدھی پیالی
کریم ۔دو پیالی
آم۔ چند ٹکڑے
آم کا گودا۔ ڈیڑھ پیالی
ونیلا ایسنس ۔چائے کا ایک چمچ
خشک میوہ (کُترا ہوا) ۔آدھی پیالی

ترکیب:
کنڈینسڈمِلک اور آدھی پیالی دودھ کو اکٹھا پھینٹ لیں، پھر اس میں آم کا گودا شامل کر یں۔ کریم کے پیالے کو برف بھرے پیالے میں رکھ کر اتنا پھینٹیں کہ یہ خوب پھول جائے۔ اب اس کو کنڈینسڈمِلک کے مرکب میں ڈالیں اور ایسنس بھی شامل کر دیں۔
ادھ جما ہونے تک فریز کر دیں۔ اس مرکب کو فریزر سے نکال کر دوبارہ پھینٹ لیں اور اس میں آم کے ٹکڑے شامل کر دیں۔ ایک بار پھر جمنے کے لئے فریز کردیں۔ پیش کرنے سے پہلے آئس کریم کو کانٹے کی مدد سے اتنا پھینٹ لیں کہ آئس کریم نرم ہو جائے۔ اسے بنانا کریم اور خشک میوے کے ساتھ پیش کر یں۔

مینگو پوری

درکار اجزاء:
میدہ۔ ایک پاؤ
گھی۔ حسبِ ضرورت
میٹھے پکے ہوئے آم کا گودا ۔ایک چھٹانک
چینی۔ ایک بڑا چمچ

ترکیب:
گھی میں میدہ بھون لیں اور اسے آم کے گودے میں گوند کر سخت لئی بنا لیں۔ اس کی آٹھ چھوٹی چھوٹی گولیاں بنا کر پوریاں بیل لیں اور تلنے کے دوران ان پر چینی بکھیرتے جائیں۔ پھرگرم گرم مینگو پوری گھروالوں کو پیش کریں۔

مینگو میکرونی سیلڈ

درکار اجزاء:
آم ۔دو کپ (کیوبز بنالیں)
نارنجی۔ آدھا کپ (چھلکا اتارلیں)
نارنجی کا جوس ۔دو کھانے کے چمچ
ادرک کا عرق ۔آدھا چائے کا چمچ
میکرونی۔ ایک کپ (ابلی ہوئی)
انگور ۔آدھا کپ
انار ۔دو کھانے کے چمچ
کالی مرچ ۔چائے کا چمچ
مکھانے ۔آدھا کپ (بھنے ہوئے)

ترکیب:
آم کے کیوبز کو میکرونی کے ساتھ مکس کر لیں۔ اس میں نارنجی، انگور، انار، نارنجی کا جوس، ادرک کا عرق ، کالی مرچ پاؤڈر اور مکھانے ڈال دیں اور اچھی طرح مکس کر لیں۔ اس کے بعد اس کو فریج میں 2 گھنٹے کے لئے رکھ دیں۔ ٹھنڈا ہونے پر پیش کریں۔

مینگو مرینگ پائی

درکار اجزاء:
میدہ۔ ڈھائی کپ
مکھن۔ آٹھ کھانے کے چمچ
نمک ۔آدھا چائے کا چمچ
پانی ۔حسب ضرورت

فلنگ کے لیے:
آم ۔تین عدد
آم کا رس۔ ایک کپ
چینی ۔تین چوتھائی کپ
انڈے۔ دو عدد
مکھن ۔اڑھائی کھانے کے چمچ
لیموں کا رس۔ آدھا کپ
کارن فلور۔ ایک چوتھائی کپ
لیموں کا چھلکا۔ دو چائے کے چمچ

مرینگ کے لیے:
انڈے کی سفیدی ۔تین عدد
نمک۔ ایک چٹکی
لیموں کا چھلکا ۔چار لیموں
چینی۔ آدھا کپ
پانی۔ ایک چوتھائی کپ

ترکیب:
آم کا گودا، مینگو جوس، چینی، لیموں کا رس، انڈے اور کارن فلور کو ایک ساتھ اُبال آنے تک پکائیں۔ آخر میں ایک کھانے کا چمچ مکھن ڈال کر ٹھنڈا کر لیں۔ ڈو کے لیے میدہ میں نمک، مکھن اور پانی ڈال کر اچھی طرح مکس کرکے آدھا گھنٹہ فریج میں رکھیں۔ اب ڈو نکال کر رول کرلیں اور نو انچ کے پائی پین میں لگائیں۔ اوپر سے آم کی فلنگ شامل کرکے فریج میں ٹھنڈا کر لیں۔ مورینگ کے لیے انڈے کی سفیدی میں نمک ڈال کر پھینٹ لیں۔ چینی کو پانی ڈال کر پکائیں۔ گرم شوگر سیرپ کو انڈے کی سفیدی میں تھوڑا تھوڑا ڈال کر مکس کرتے جائیں۔ اب آم فلنگ پر پھیلائیں اور کھانے کے لیے پیش کردیں۔

آم کی ربڑی

درکار اجزاء:
دودھ ۔چھ کپ
شکر ۔ایک کپ
آم کا گودا ۔ایک کپ

ترکیب:
کڑھائی میں دودھ ڈال کر ابالیں اور پھر دھیمی آنچ پر ڈیڑھ گھنٹے تک پکنے دیں یا جب تک وہ گاڑھانہ ہو جائے ۔ چولہے سے اتار کر اس میں شکر ملا دیں اور ملاتے رہیں یہاں تک کہ شکر اس میں حل ہو جائے ۔ ربڑی کے ٹھنڈے ہو جانے کے بعد اس میں آم کا گودا ملا دیں۔ ریفریجریٹر میں ٹھنڈا کر کے پیش کریں۔

ایگ لیس مینگو موز

درکار اجزاء:
مینگو پیوری۔ دو کپ
چینی ۔آدھا کپ (پسی ہوئی)
کریم ۔دو کپ
جیلیٹن پاؤڈر۔ ایک کھانے کا چمچ
پانی۔ چار کھانے کے چمچ
آم ۔گارنش کے لئے
پودینے کے پتے ۔گارنش کے لئے

ترکیب:
پہلے مینگو پیوری اور پسی چینی کو ملا کر پکائیں اور ٹھنڈا کرلیں۔ اب کریم کو پھینٹیں اور پھر جیلیٹن پاؤڈر کو پانی میں گھول لیں۔ اس کے بعد تمام چیزوں کو مکس کرلیں۔ آخر میں آم اور پودینے کی پتیوں سے گارنش کرکے پیش کریں۔

مینگو اینڈ پیچ کولاڈا

درکار اجزاء:
آم (گودا الگ کرلیں) ۔ ایک عدد
آڑو (گودا چوپ کرلیں) ۔ دو عدد
کوکونٹ ملک ۔دو کپ
برف ۔ حسبِ پسند
کریم ۔ ایک کپ
شکر ۔ حسب ِپسند

ترکیب:
گرینڈر میں آم کا گودا، ایک کپ کوکونٹ ملک،دو چائے کے چمچ شکر، آدھا کپ کریم اور برف ڈال کر گرائنڈ کر کے سرونگ گلاسز میں نکالیں ۔ہر گلاس میں آدھا آدھا ڈال لیں۔ پھرگرائنڈر کو دھو کر اس میں آڑو، بقیہ کوکونٹ ملک،کریم، دو چائے کے چمچ شکر اور برف ڈال کر گرائنڈ کر لیں اور سرونگ گلاسز میں نکالے ہوئے آم مسکچر کے اوپر ڈالیں۔ پودینے کے پتوں اور چیری سے گارنش کر کے پیش کریں۔

کیری کی چٹنی

درکار اجزاء:
کیری۔آدھا کلو
چینی۔750 گرام
پانی۔ڈھائی کپ
باریک کٹی ادرک۔دو کھانے کے چمچ
باریک کٹا لہسن۔دو کھانے کے چمچ
سفید سرکہ۔ایک کپ
ثابت لال مرچ۔پندرہ عدد
کُٹی لال مرچ۔ایک چائے کا چمچ
نمک۔آدھا چائے کا چمچ

ترکیب:
کیریوں کو باریک سلائس میں کاٹ کر ایک گھنٹے کے لیے پانی میں بھگو کر رکھیں۔ اس کے بعد چھلنی میں چھان لیں۔ اب ایک برتن میں چینی اور اڑھائی کپ پانی ڈال کر پکائیں اور اوپر آنے والے جھاگ کو ہٹاتے رہیں۔ جب چینی حل ہو جائے تو اس میں سلائس میں کٹی کیریاں شامل کریں اور بیس منٹ تک ہلکی آنچ پر پکائیں۔ جب کیریاں آدھی گل جائیں تو باریک کٹی ادرک اور باریک کٹا لہسن بھی ڈال دیں۔
ادرک لہسن کی خوشبو آنے لگے تو سفید سرکہ، ثابت لال مرچ، کُٹی لال مرچ اور نمک ڈال کر ہلکی آنچ پر پکائیں۔ جب گاڑھا سیرپ بن جائے اور بلبلے اوپر آنے لگیں تو چولہے سے ہٹا لیں۔ کیری کی چٹنی تیار ہے۔

تربوز ملک شیک

درکار اجزاء:
تربوز۔ – ایک کلو
دودھ – ۔آدھا کلو
لال شربت۔ – ایک کپ
کریم – ۔آدھا کپ
برف – ۔حسب ضرورت
پودینہ – ۔گارنش کے لئے
بادام، پستے – ۔چار کھانے کے چمچ (باریک کٹے ہوئے)

ترکیب:
بلینڈر میں تربوز، دودھ، لال شربت، کریم اور برف ڈال کر اچھی طرح بلینڈ کریں۔ اب بادام پستے ڈالیں اور پودینے سے گارنش کرکے پیش کریں۔

تربوز کیک

درکار اجزاء:
تربوز۔ – ایک عدد
ناریل (کھوپرا) پاؤڈر۔حسبِ ضرورت
ویپ کریم۔حسبِ ضرورت
بلیک بیریز۔ – 5 سے 6عدد
رس بیریز۔ – 5 سے 6عدد
سٹرا بیریز۔ – 5 سے 6عدد
بادام (چاپ کیےہوئے)۔حسب ضرورت

ترکیب:
تربوز کو چھلکے کے بغیرکیک کی شکل میں کاٹ لیں۔ یعنی کہ درمیان سے کاٹ کر تقریباً 4 سے 6 انچ اونچا اور تقریباً 8 انچ قطر کا ہونا چاہیے۔ ویپ کریم میں ناریل کا برادہ اچھی طرح ملا کر کٹے ہوئے تربوز پر سب طرف اچھی طرح لگا دیں۔ پھر اس پربلیک بیریز ،سٹرا بیریز اور رس بیریزسے سجاوٹ کرلیں۔ چاپ کیے ہوئے بادام اس کے اطراف میں لگا دیں۔

تربوز کے کٹلٹس

درکار اجزاء:
تربوز کے چھلکے۔کدوکش اور اسٹیم
آلو ۔ایک کپ ابلے ہوئے
قیمہ ۔آدھا کپ اسٹیم کیا ہوا
ہری مرچ۔حسبِ ذائقہ
ہرا دھنیا اور پودینہ۔دو چمچ
لیموں کا رس۔ایک چمچ
نمک اور کالی مرچ۔حسبِ ذائقہ
پسا سفید زیرہ۔ایک چمچ

ترکیب:
تمام اجزاء مکس کر کے چھوٹی چھوٹی ٹکیاں بنا کر انڈہ اور بریڈ کرمبز میں کوٹ کر کے فرائی کر لیں۔ اب تربوز کے کٹلٹس پلیٹ میں رکھ کر پیش کریں۔

ٹھنڈائی

درکار اجزاء:
تازہ دودھ۔ ایک لیٹر
خربوزے کے چھلکے ۔تین بڑے چمچ
بادام ۔دو بڑے چمچ (ابلتے ہوئے پانی میں ایک منٹ ڈال کر نکال لیں اور ٹھنڈے پانی میں ڈال کر چھلکا اتار لیں)
کاجو۔دو بڑے چمچ
خشخاش ۔ دو بڑے چمچ
کالی مرچ ۔ آ دھا چائے کا چمچ
سونف ۔ ایک چمچ
زعفران ۔ایک چٹکی
سبزالائچی ۔ پانچ عدد
گلاب کا عرق۔ پانچ چمچ
روح کیوڑہ ۔چند قطرے
چینی ۔سات بڑے چمچ

ترکیب:
ایک کپ دودھ لے کر اس میں یہ تمام اجزاء ڈال کر اچھی طرح سے بلینڈ کر لیں۔ اب باریک کپڑے سے چھان لیں اور چھانے ہوئے دودھ میں باقی دودھ بھی شامل کر دیں۔ اب تین سے چار گھنٹے کے لئے فریج میں رکھیں اورپھر گلاس میں پیش کریں۔

لیچی واٹر میلن موکٹیل

درکار اجزاء:
تربوز ۔ایک کپ
لیچی ۔آدھا کپ
روز سیرپ ۔آدھا کپ
لیموں کا رس۔ آدھا کھانے کا چمچ

ترکیب:
تربوز، لیچی، روز سیرپ اور لیموں کا رس ڈال کر مکس کریں۔ اب گلاس میں ڈال کر سرو کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں