لاک ڈاؤن میں راشن لینےگیا بیٹا ،دلہن گھرلے آیا

Spread the love

عالمی وبا کورونا وائرس کے پیش نظر جاری بھارت میں لاک ڈاؤن کے دوران ماں کی جانب سے باہر سے سودا سلف منگوانے پر بیٹا دلہن گھر لے آیا۔
بھارتی ویب سائیٹ ’این ڈی ٹی وی‘ کے مطابق بھاتی ریاست اترپردیش کے 26 سالہ گڈو کو ماں نے گھر سے باہر سودا سلف لانے کے لیے بھیجا تھا، بیٹا واپسی پر گھر کا سامان لانے کے بجائے دلہن لے آیا ۔
غازی آباد کی مقامی پولیس کے مطابق ایک ماں کی جانب سے شکایت موصول ہوئی تھی، گڈوکی ماں نے پولیس اسٹیشن آ کر بیان دیا تھا کہ ’میں نے اپنے بیٹے کو لاک ڈاؤن کے دوران گھر کا سودا سلف لانے کے لیے باہر بھیجا تھا، بیٹا واپسی پر سامان کے بجائے اپنے ساتھ اپنی بیوی لے آیا ہے، میں اپنے بیٹے کی اس خفیہ شادی کو کسی حال میں قبول نہیں کروں گی ۔‘
پولیس کے مطابق 26 سالہ گڈو کا پولیس کے دیئے گئے بیان میں کہنا ہے کہ دو ماہ قبل اس نے ماں سے چھپ کر شادی کی تھی، ماں قبول نہیں کرے گی اس لیے شادی کے فوراً بعد اپنی دلہن کو گھر نہیں لایا تھا۔

یہ بھی پڑھیے: رشی کپور کو مرنے سے پہلے پاکستان کیوں آنا چاہتے تھے؟

گڈو کا کہنا ہے کہ میری بیوی شادی کے بعد دہلی میں ایک کرائے کے گھر میں رہ رہی تھی، لاک ڈاؤن کے دوران کچھ مشکلات پیش آنے پر وہ گھر چھوڑنا پڑا تھا۔
26 سالہ گڈو نے پولیس کو مزید بتایا کہ شادی کے وقت گواہ کی عدم موجودگی کے سبب انہیں شادی کا سرٹیفکیٹ نہیں مل سکا تھا، سوچا تھا کہ لاک ڈاؤن ختم ہوتے ہی شادی کا سرٹیفکیٹ ملنے پر دلہن کو گھر لے آؤں گا مگر تا حال سرٹیفکیٹ نہیں مل سکا ہے۔
دوسری جانب غازی آباد پولیس کی جانب سے گڈو اور اس کی دلہن کو ماں کے ساتھ ان کے گھر رہنے کا کہا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں